Home
National
Islamabad
Punjab
Sindh
Balochistan
Khyber Pakhtunkhwa
Gilgit Baltistan
Tribal Areas
Azad Kashmir
International
Sports
Showbiz
Images
 
چار افرادسپریم کورٹ میں پیش، لاپتہ افراد کو منگل تک پیش کرنے کا حکم
وقت اشاعت: Friday, 6 April, 2012, 12:00 GMT 17:00 PST

کوئٹہ  ... چیف جسٹس افتخار محمد چودھری نے آئی جی بلوچستان کو حکم دیا ہے کہ 3اپریل کو کوئٹہ کے علاقے کلی اسماعیل سے لاپتہ ہونے والے تین افراد کومنگل  10اپریل تک عدالت میں پیش کیا جائے اس سے قبل سات میں سے چار لاپتہ افراد عدالت میں پیش کئے گئے جبکہ باقی تین افراد کو پیر کو پیش کرنے کا حکم دیا گیا، چیف جسٹس نے آئی جی ایف سی کو آئندہ سماعت پر صوبائی وزیرصادق عمرانی کے بیان پر مکمل وضاحت پیش کرنے کا بھی حکم دیا ہے،جمعہ کوبلوچستان میں امن و امان سے متعلق کیس کی سماعت سپریم کورٹ کوئٹہ رجسٹری میں چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کی ،بنچ میں جسٹس خلجی عارف اور جسٹس طارق پرویز شامل تھے،سماعت کے دوران سریاب روڈ سے 10مارچ کو لاپتہ ہونے والے سات میں سے چار افراد کو عدالت میں پیش کیا گیا، چیف جسٹس نے ایس ایچ او کو سرزنش کرتے ہوئے کہا کہ 10اپریل تک باقی لاپتہ افراد پیش نہ ہوسکے توایس ایچ او کو معطل کردیا جائے گا،چیف جسٹس نے آئی جی کو حکم دیا کہ اگر کوئی سرکاری اہلکار بھی کسی کے اغوا میں ملوث ہو تو اس کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے،چیف جسٹس نے اٹارنی جنرل کی عدم موجودگی پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اٹارنی جنرل کی غیرموجودگی سے معلوم ہوتا ہے کہ وفاق اس معاملے میں کتنی دلچسپی رکھتا ہے، چیف جسٹس نے آئی جی ایف سی سے کہا کہ جب فورسز کی عزت نہ رہے تو کیا ہوگا ؟حلف اٹھانے والا الزام لگا رہا ہے آپ پرسنگین الزا مات ہیں ،آئی جی ایف سی میجر جنرل عبید اللہ نے بتایاکہ صوبائی وزیر کے الزام کے بعد میڈیا پر تردید پیش کردی گئی تھی۔ چیف جسٹس نے کہا کہ آپ پولیس کو ساتھ لیکر چلیں تو معاملات ٹھیک ہو جائیں گے ،

 
 
Click here to visit SuperWebz.com